Technology Transfer through Cyber Extension -- Helping Farmers to Help Themselves

 کاشتکار مکئی کی فصل میں جڑی بوٹیوں کی بروقت تلفی سے پیداوار میں45فیصد تک اضافہ کر سکتے ہیں ۔نظامت زرعی اطلاعات پنجاب کے ترجمان کے مطابق مکئی کی فصل میں جڑی بوٹیوں کی زیادہ تعداد پیداوار میں کمی اور فصل کو تباہ کرنے کا سبب بن سکتی ہے۔ترجمان نے مزید بتایا کہ مکئی کی فصل کی اہم جڑی بوٹیوں میں اِ ٹ سٹ، تاندلہ، باتھو، کرنڈ ، لیہلی، جنگلی ہالوں ، جنگلی پالک ، چبڑ ، بھکھڑا ، ڈیلا ، کھل گھاس ، مدھانہ ، سوانکی اور بَرو وغیرہ شامل ہیں۔

 

 

ان جڑی بوٹیوں کی تلفی کے لیے ڈرل سے کاشت کی گئی فصل میں پہلی سے تیسری آبپاشی تک ہر آبپاشی کے بعد زمین کی وتر حالت میں گوڈی کریں جبکہ ٹریکٹر کی صورت میں پھالوں کا فاصلہ مکئی کی لائنوں کے مطابق مقررکر کے گوڈی کی جاسکتی ہے۔آخری گوڈ ی کے وقت فصل کو مٹی چڑھا دیں جس سے نہ صرف جڑی بوٹیاں مٹی کے نیچے دب کر ختم ہو جاتی ہیں بلکہ فصل گرنے سے بھی محفوظ رہتی ہے ۔زرعی ماہرین کے مطابق کھیلیوں پر کاشت کی گئی مکئی میں جڑی بوٹیوں کی تلفی کے لیے جڑی بوٹی مار زہروں کا استعمال انتہائی مفید ہے ۔ان زہروں کے استعمال سے جڑی بوٹیاں 30سے 40دن تک اُگنے میں کامیاب نہیں ہو تیں ۔ مناسب زہروں کا استعمال زرعی ماہرین کے مشورہ سے کریں۔

(Source: ZaraiMedia & Agri. Information Punjab)